رمضان کےانتیسویں دن کی دعا کے پیغامات اور تشریح

 

اَللَّهُمَّ غَشِّنِي فِيهِ بِالرَّحْمَهِ

خدایا اپنی رحمت سے مجھے ملبس کردے کیونکہ جب خدا ہمیں اپنی رحمت میں چھپا لے گا تو ہمارے سارے عیب اور  نقص بر طرف ہو جائیں گے۔

وَارْزُقْنِي فِيهِ التَّوْفِيقَ وَ الْعِصْمَهَ

 توفیق جیسی نعمت کو عطا فرما

 پروردگار ہمیں نماز شب کی توفیق عطا فرما کیونکہ اگر توفیق نہ ہوئی تو کوئی علم  عمل میں تبدیل نہیں ہوتا۔ مومنوں کی خصلتوں میں سے ایک  خصلت توفیق ہے۔ لیکن یاد رہے کہ یہ گناہ توفیقات کو کم کردیتے ہیں  بس جتنے ہمارے گناہ  کم ہوں گے اتنی ہی ہماری توفیقات میں اضافہ ہوگا۔

وَ طَهِّرْ قَلْبِي مِنْ غَيَاهِبِ التُّهَمَهِ يَارَحِيماً بِعِبَادِهِ الْمُؤْمِنِينَ

 پروردگار گناہ سے محفوظ اور میرے دل کو شک کی گندگی سے پاک فرما۔

 یہ شک ہے جو بہت سے اختلافات، بہت سی زندگیوں کو ویران کرنے کا سبب  بنا ہے اگر کوئی بہت شک کرتا ہے تو ہر روز سو مرتبہ لا حول ولا قوۃ الا باللہ العلی العظیم پڑھے  یہ  ذکر اس کے شک کو برطرف کرنے میں مدد کرے گا۔کیونکہ ذکر جنت کے خزانوں میں سے ایک خزانہ ہے۔